18th September,2020 news point in urdu

حکومت صدر کا تقاضا ختم کرے گی
حکومت نے صدر اور وزیر اعظم کے تقاضوں اور مراعات کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں قانون سازی جاری ہے۔ جمعرات کے روز لگاتار دوسرے دن قومی اسمبلی میں کورم کی کمی کے سبب قانون سازی کا کاروبار نہیں ہوسکا حکومت صدر اور وزیر اعظم کی تنخواہوں اور الاؤنسز میں اضافے سے متعلق ایوان میں دو الگ الگ بل پیش کرنے کے لئے تیار تھی۔ وہی بل جن میں صدر کی تنخواہ ، الاؤنسز اور استحقاق ایکٹ 2020 اور وزیر اعظم کی تنخواہ ، الاؤنسز اور استحقاق ایکٹ ، 2020 شامل ہیں بدھ کے روز بھی اس دن کے حکم پر موجود تھے جب کورم کی کمی کے معاملے کو حزب اختلاف کے ممبروں نے اٹھایا تھا۔
حکومت عصمت دری کے مجرموں کے لئے سزائے موت پر غور کررہی ہے
حکومت عصمت دری کے قوانین کے موجودہ سیٹ میں بچوں اور خواتین کے عصمت دری کرنے والوں کے لئے سزائے موت کو متعارف کرانے کے لئے مختلف تبدیلیوں پر غور کر رہی ہے جن کے معاملات میں عبرتناک عوامل شامل ہیں۔ اس کے تحت خصوصی عدالتوں کے قیام اور اس جرم کو غیر پیچیدہ بنانے پر بھی غور کیا جارہا ہے۔
ایف اے ٹی ایف قانون سازی بہترین قومی مفاد میں کی گئی
وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے جمعرات کو کہا کہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) قانون سازی بہترین قومی مفاد میں کی گئی۔ یہاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے اپوزیشن کی رکاوٹوں کے باوجود حکومت کی فتح کو پارلیمنٹ سے ایف اے ٹی ایف قانون سازی کی کامیاب منظوری قرار دیا۔ انہوں نے اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) کی ناکامی کی پیش گوئی کی۔
پولیو وائرس کو حفاظتی ٹیکوں سے بچا ہوا بچہ
ٹوبہ ٹیک سنگھ / لاہور: پیرمحل کی 6 ماہ کی بچی کو پولیو وائرس کا مریض معلوم ہوا۔ محکمہ صحت کو دریائے راوی کے سر سدھنائی کے قریب واقع چک اکبر ساہو کے بشیر احمد سے شکایت موصول ہوئی تھی کہ ان کی چھ ماہ کی بیٹی سویرا بی بی کی ایک ٹانگ مفلوج ہوگئی ہے۔ محکمہ صحت نے اس کے پاخانہ کے نمونے اسلام آباد نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ بھجوائے تھے جہاں اس بات کی تصدیق ہوگئی تھی کہ وہ بچی پولیو وائرس ٹائپ -2 میں مبتلا ہے
فضل الرحمن کا حکومت سے “شرمناک احتساب” روکنے کا مطالبہ
جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے جمعرات کو پاکستان تحریک انصاف کی حکومت سے کہا کہ وہ شرمناک احتساب کرکے اپوزیشن جماعتوں کے صبر کا امتحان نہ لیں۔ فضل الرحمن نے پریڈ گراؤنڈ میں خاتم النبو ی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ، “موجودہ حکومت کو لازمی طور پر فرعون طرز کے حکمرانی کو روکنا چاہئے اور اپنے حکمرانی کو طول دینے کے لئے قوم کو افراتفری اور بحران میں الجھانا ہے۔
آئی ایچ سی نے پوچھا: نواز شریف کی عدالت میں موجودگی کو یقینی بنانے کے لئے کیا کریں
اسلام آباد ہائیکورٹ کے رجسٹرار آفس (جمعرات) نے جمعرات کو سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کے العزیزیہ اسٹیل ملز اور ایوین فیلڈ پراپرٹی ریفرنسز میں دفتر خارجہ کے توسط سے اپنے پارک لین لندن مکتوب پر ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ بھیجا۔ دفتر خارجہ کو ہدایت کی گئی تھی کہ وہ 22 ستمبر کو برطانیہ میں پاکستان ہائی کمیشن کے توسط سے ملزم کی موجودگی کو یقینی بنائے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *